اشیائے خور و نوش

گزشتہ ہفتے کے دوران 21اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، ادارہ شماریات

اسلام آباد(ر پورٹنگ آن لائن) ادارہ شماریات کے مطابق گزشتہ ہفتے کے دوران 21اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق گزشتہ ہفتے 14سے 18جون 2021کے دوران مہنگائی کی شرح میں اضافہ دیکھا گیا، 21اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں اضافہ، 9اشیائے خور و نوش کی قیمت میں کمی اور 21اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں استحکام دیکھا گیا،تفصیلات کے مطابق پاکستان ادارہ برائے شماریات نے مہنگائی کی ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی، 14سے 18جون 2021کے دوران مہنگائی کی شرح میں 0.28فیصد اضافہ ہوا،رپورٹ میں کہا گیا کہ ایک ہفتے کے دوران 21اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔ ٹماٹر، چکن، آلو، گھی، دودھ، دہی اور آٹے کا تھیلا مہنگا ہوگیا،گزشتہ ہفتے کے دوران ٹماٹر کی فی کلو قیمت میں 4.69روپے اضافہ ہوا، زندہ مرغی کی قیمت میں 12.19روپے اضافہ ہوا جس کے بعد زندہ مرغی فی کلو 194روپے سے بڑھ کر 206روپے ہوگئی،مٹن کی فی کلوقیمت میں 4.36روپے کا اضافہ ہوا، آلو کی فی کلو قیمت میں 1روپیہ، گڑ کی فی کلو قیمت میں 1.44روپے اور دودھ کی فی لیٹر قیمت میں 25پیسے کا اضافہ ہوا،

گزشتہ ہفتے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا،رپورٹ کے مطابق گزشتہ ہفتے کے دوران 9اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں کمی ہوئی، چینی کی فی کلو قیمت میں 18پیسے اور کیلے کی فی درجن قیمت میں 8روپے کمی ہوئی،دال مونگ کی قیمت میں فی کلو 4روپے، دال ماش کی فی کلو قیمت میں 3.18 روپے، دال مسور کی قیمت میں 1.26روپے اور انڈوں کی فی درجن قیمت میں 55پیسے کمی ہوئی،ادارہ شماریات کے اعدادو شمار کے مطابق 21اشیائے خور و نوش کی قیمتوں میں استحکام ریکارڈ کیا گیا۔