mian-zahid-hussain.j

روس سے سستی پٹرولیم مصنوعات خریدنے کا فیصلہ درست ہے،میاں ز اہد حسین

کراچی (رپورٹنگ آن لائن)نیشنل بزنس گروپ پاکستان کے چیئرمین، پاکستان بزنس مین اینڈ انٹلیکچولزفورم وآل کراچی انڈسٹریل الائنس کے صدراورسابق صوبائی وزیرمیاں زاہد حسین نے کہا ہے کہ روس سے سستی پٹرولیم مصنوعات خریدنے کا فیصلہ درست ہے جس سے ہماری کمزور معیشت کو سہارا ملے گا۔ اس سے ملکی خزانے پر بوجھ کم ہو گا جس سے کرنٹ اکائونٹ خسارے اور مہنگائی میں کمی آئے گی۔ رعائیتی قیمت پر پٹرولیم مصنوعات کی درامد سے صارفین کے لئے بھی اسکی قیمت کم ہو جائے گی بجلی بھی سستی ہو جائے گی اور عوام کو ریلیف ملے گا۔میاں زاہد حسین نے کاروباری برادری سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ روس کی جانب سے یوکرین پر حملے اور امریکی پابندیوںکے باوجود یورپی ممالک سعودی عرب بھارت اور کئی دیگر ملک روس سے تجارت جاری رکھے ہوئے ہیں مگر ہم نے اس سلسلہ میں گیارہ مہینے گنوا دئیے۔

اب مزید وقت ضائع کئے بغیر کروڈ آئل، پٹرول اور ڈیزل کی درماد شروع کی جائے جبکہ دیگر ضروری اشیاء کی درامد کے ماکانات کا جائزہ لینے میں بھی تاخیر نہ کی جائے۔روس سے ایل این جی کی درامد کا طویل االمعیاد معاہدے بھی ضروری ہے۔ انھوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے سستی پٹرولیم مصنوعات کی درامد کا اعلان کیا گیا ہے مگر اسکی قیمت کی تفصیلات جاری نہیں کی گئی ہیں ۔ جنوری مین روس کے توانائی کے وزیر پاکستان کا دورہ کر رہے ہیں جس دوران ملکی مفادات کے مطابق معاہدہ کیا جائے کیونکہ ماضی میں توانائی کے معاہدوں میں ملک و قوم کے مفاد کو بری طرح نظر انداز کیا گیا ہے۔

میاں زاہد حسین نے کہا کہ کرونا وارس کی تباہ کاریوں اور روس اور یوکرین کے مابین جنگ کے نتیجہ میں پیدا ہونے والے مختلف بحرانوں سے ہمیں یہ سبق ملتا ہے کہ اپنے وسائل کو ترقی دیں جبکہ درامدات کے لئے ایک زریعے کے بجائے مختلف زرائع اختیار کئے جائیں تاکہ مقامی منڈی کو مستحکم رکھا جا سکے اور ادائیگیوں کا بحران سے بچا جا سکے۔انھوں نے کہا کہ ملک میں جب تک سستی توانائی نہیں ہو گی اس وقت تک معیشت ترقی نہیں کرے گی ۔ موجودہ حالات میں پیداوار اور برامدات بڑھانا ناممکن ہو گیا ہے اور سستی توانائی کے حصول سے صورتحال میں بہتری کاامکان ہے۔