دوسرے ٹیسٹ

دوسرے ٹیسٹ میں پاکستان کو 26 رنز سے شکست، انگلینڈ نے تین میچوں کی سیریز اپنے نام کرلی

ملتان (رپورٹنگ آن لائن)انگلینڈ نے ملتان میں کھیلے گئے دوسرے ٹیسٹ میں پاکستان کو 26 رنز سے شکست دے کر 3 میچوں کی سیریز اپنے نام کرلی،انگلینڈ کے 355 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستان کی پوری ٹیم میچ کے چوتھے روز 328 رنز بنا کر آئوٹ ہوگئی، پاکستان کی جانب سے سعود شکیل نے شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 94 رنز کی اننگز کھیلی،انگلینڈ کی جانب سے مارک ووڈ نے پاکستان کے 4 کھلاڑیوں کو آئوٹ کیا،میچ کی دوسری اننگز میں شاندار 108 رنز بنانے پر ہیری بروک کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق کھیل کے چوتھے روز پہلے آئوٹ ہونے والے کھلاڑی فہیم اشرف تھے جو صرف 10 رنز بنا کر جو روٹ کا شکار بنے۔دوسرے اینڈ پر سعود شکیل بیٹنگ کر رہے تھے جنہوں نے رنز بنانے کا سلسلہ جاری رکھا اور آل رائونڈر محمد نواز کے ہمراہ ایک اچھی پارٹنرشپ بنا کر قومی ٹیم کی جیت کی امید جگائی لیکن پھر محمد نواز 45 رنز بنا کر آئوٹ ہوگئے۔اس کے بعد سعود شکیل بھی زیادہ دیر وکٹ پر ٹھہر نہ سکے اور 94 رنز کی فائٹنگ اننگز کھیل کر پویلین لوٹ گئے۔

سعود شکیل، مارک ووڈ کی گیند پر وکٹ کیپر کی جانب سے پکڑے گئے ایک متنازع کیچ پر آئوٹ ہوئے جس پر مختلف حلقوں کی جانب سے سوالات اٹھائے جانے لگے ۔گیند سعود شکیل کے بیٹ کو چھوتی ہوئی وکٹوں کے پیچھے گئی جسے کیپر نے ڈائیو لگاتے ہوئے کیچ کر لیا جس کے بعد کیچ آئوٹ کی اپیل کی گئی تاہم فیصلہ تھرڈ امپائر پر چھوڑ دیا گیا جنہوں نے سعود شکیل کو آئوٹ قرار دیا۔سعود شکیل کو آئوٹ قرار دیے جانے کے بعد امپائر کے فیصلے پر سوالات اٹھائے گئے ، معروف ویب سائٹ کرک انفو نے سوال اٹھایا کہ کیا کلین کیچ تھا۔سعود شکیل کے آئوٹ ہونے کے بعد ابرار احمد 17 رنز بنا کر آٹ ہوئے، ان کے بعد زاہد محمود اور محمد علی صفر پر پویلین لوٹے جبکہ آل رائونڈر آغا سلمان 20 رنز بنا کر ناٹ آئوٹ رہے۔

انگلینڈ کی جانب سے مارک ووڈ نے 4 کھلاڑیوں کو آئوٹ کیا، اولی روبنسن اور جیمز اینڈرسن نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں جب کہ جیک لیچ اور جو روٹ نے ایک، ایک کھلاڑی کو آئوٹ کیا۔میچ کی دوسری اننگز میں شاندار 108 رنز بنانے پر ہیری بروک کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔یاد رہے کہ گزشتہ روز تیسرے دن کے کھیل کے اختتام پر پاکستان نے 4 وکٹوں کے نقصان پر 198 رنز بنالیے تھے۔انگلینڈ کی ٹیم اپنی دوسری اننگز میں 275 رنز بنا کر آٹ ہوگئی تھی اور یوں پاکستان کو جیت کے لیے 355 رنز کا ہدف ملا تھا۔گزشتہ روز پاکستان نے 355 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پراعتماد آغاز کرتے ہوئے بغیر کسی نقصان کے 66 رنز بنائے تھے کہ اوپنر محمد رضوان تجربہ کار فاسٹ بالر جیمز اینڈرسن کا نشانہ بن گئے، وہ 30 رنز بنا کر آئوٹ ہوئے۔وکٹ کیپر بلے باز کے آٹ ہونے کے بعد کپتان بابر اعظم کریز پر آئے لیکن زیادہ دیر نہ ٹھہر سکے اور صرف ایک رن بنا کر اولی روبنسن کا شکار بن گئے۔پاکستان کے تیسرے آئوٹ ہونے والے کھلاڑی اوپنر عبد اللہ شفیق تھے جو 45 رنز بنا کر آٹ ہوئے، انہیں فاسٹ بالر مارک ووڈ نے آئوٹ کیا، اس وقت ٹیم کا مجموعی اسکور 83 رنز تھا۔بعد ازاں سعود شکیل اور امام الحق کے درمیان 108 رنز کی شراکت قائم ہوئی، امام الحق 60 کے انفرادی اسکور پر لیچ کو کیچ دے بیٹھے تھے۔جب تیسرے روز کے کھیل کا اختتام ہوا تو انگلینڈ کے 355 رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستان نے 4 وکٹوں کے نقصان پر 198 رنز بنالیے تھے اور پاکستان کو جیت کے لیے مزید 157 رنز کی ضرورت تھی جبکہ اس کی 6 وکٹیں باقی تھیں۔